پنجاب کی پہلی خاتون وزیراعلیٰ کا اعزاز بہت بڑا اعزاز ہے،جو کام کرنا ہے اس کےلئیے 6 سال بہت کم ہیں: مریم نواز

مسلم لیگ (ن) کی جانب سے نامزد وزیراعلیٰ پنجاب مریم نواز نےکہاہےکہ پنجاب میں یہ ن لیگ کیلئے بہت مشکل الیکشن تھا لیکن پنجاب کے عوام نے ن لیگ کو بہت واضح مینڈیٹ دیا اور پنجاب کا نیا دور شروع ہوگیا۔

لاہور میں ن لیگ کی پنجاب کی پارلیمانی پارٹی اجلاس سے خطاب میں مریم نواز کا کہنا تھاکہ آپ سب کو فتح پر مبارک باد دیتی ہوں، مسلم لیگ ن کی پنجاب میں واضح اکثریت آئی ہے، بہت بڑی تعداد نوجوان ایم پی ایز کی آئی ہے، نوجوان ایم پی اے منتخب ہونے پر بہت خوشی ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ ایک مشکل الیکشن تھا، واضح اکثریت پر پنجاب کی عوام کا شکریہ ادا کرتی ہوں، پنجاب کا آج سے نیا عہد ، نیا دور شروع ہوگا، ہم خدمت کے نئے ریکارڈ قائم کریں گے۔

ان کا کہنا تھاکہ ہم سب کو ایک ٹیم بن کرخدمت کے ریکارڈ قائم کرنا ہیں، پنجاب کی پہلی خاتون وزیراعلیٰ کا اعزاز بہت بڑا اعزاز ہے، یہ اعزاز ہر بیٹی، ماں، بچی اور مخصوص نشستوں کی خواتین کے نام کرتی ہوں.

مریم نے مزید کہا کہ دوسرے صوبوں سے آنے والے پنجاب میں واضح فرق دیکھتے ہیں جہاں کام ہوا ہے وہ نظر آتا ہے جہاں خالی باتیں ہوئی ہیں وہ نظر آتی ہیں، نوازشریف نے 2015 میں پاکستان کا پہلا ہیلتھ کارڈ شروع کیا، ہیلتھ کارڈ میں کوئی کرپشن نہیں ہوئی،احسن طریقے سے چلایا، ہیلتھ کارڈ کے ذریعہ لوگوں کی مفت سرجری ہوتی تھی، اب ہیلتھ کارڈ میں کرپشن ہوئی، پیسہ کمانے کا ذریعہ بنایاگیا۔

انہوں نے کہا کہ ہیلتھ، تعلیم ، لوکل گورنمنٹ کے شعبے میں بہت چیلنجز ہیں، دیہاتوں میں سیوریج، صاف پانی کا بہت بڑا مسئلہ ہے، پنجاب کے 297 حلقوں کو 297 ڈسٹرکٹ کے طور پر دیکھنا ہے، محفوظ پنجاب پروگرام پر بھی کام کیا ہے، سیف سٹی پروجیکٹ کو تمام شہروں میں لے کر جانا ہے، خواتین کیلئے تھانوں میں بہتری لانا ہے، ماڈل وومن پولیس اسٹیشن بنانا ہیں۔

ان کہنا تھاکہ افسوس سے کہنا پڑتا ہے ملک میں ایک بھی آئی ٹی سٹی نہیں، پانچ سالوں میں 5 آئی ٹی سٹی بنا کر جائیں گے، میرج، ڈیتھ اور کار سرٹیفکیٹ گھر کی دہلیز پر ملیں گے، نرسنگ کی ٹریننگ بھی میرے وژن میں شامل ہے، نرسز کیلئے انسٹی ٹیوٹ بنائیں گے، نوجوانوں کو بلا سود قرضے فراہم کریں گے۔

مریم نواز نے کہا کہ ہیلتھ کارڈ ری ڈیزائن کرکے پرائیوٹ اورسرکاری اسپتالوں میں علاج کی سہولت فراہم کریں گے، پنجاب میں پہلی ائیرایمبولینس شروع کریں گے، موٹر وے پر ایمبولینس سروس شروع کریں گے، صحت سے متعلق تمام سہولتوں کی فراہمی یقینی بنائیں گے، کڈنی، لیور، ہارٹ اور کینسر کے اسپتالوں میں ایڈیشنل یونٹ یا اسپتال بنائیں گے۔

اسکولز کے حوالے سے نامز وزیراعلیٰ کا کہنا تھاکہ 49 ہزار پنجاب میں سرکاری اسکول ہیں، اسکول میں کہیں باتھ روم نہیں، کہیں ٹیچر نہیں، صوبے میں پبلک پارٹنر شپ پر اسکول چلائیں گے، پنجاب کا آج سے نیا دور شروع ہوگا، پنجاب کے عوام نے ن لیگ کو واضح مینڈیٹ دیا، شہباز شریف کے دور میں پنجاب نے ریکارڈ ترقی کی، دوسرے صوبے تمنا کرتے تھے ہمارے پاس بھی شہباز شریف جیسا وزیر اعلیٰ ہو، کام بہت کرنےہیں جس کے لیے 5 سال بہت کم ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.