نیپالی کرکٹر سندیپ لیمی چین پر کم عمر لڑکی کے ساتھ ریپ کا جرم ثابت

نیپالی کرکٹر سندیپ لیمی چین پر کم عمر لڑکی کے ساتھ زیادتی کا جرم ثابت ہوگیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق ریپ الزامات کیس کی سماعت ایک ہفتے تک جاری تھی، گزشتہ روز کٹھمنڈو کی مقامی عدالت میں کیس کی آخری سماعت ہوئی جس میں کرکٹر پر کم عمر لڑکی کے ساتھ زیادتی کا جرم ثابت ہوگیا۔

آئندہ سماعت میں 23 سالہ کرکٹر کو سزا سنائی جائے گی، کرکٹر فی الحال ضمانت پر رہا ہیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ سال ستمبر میں 17 سالہ لڑکی نے کرکٹر پر الزام عائد کیا تھا کہ اگست 2022 میں کھٹمنڈو کے ایک ہوٹل کے کمرے میں سندیپ لیمی چین نے ان کے ساتھ زیادتی کی تھی۔

ان الزامات کے بعد کرکٹر کو نیپالی پولیس نے 6 اکتوبر کو کیریبین پریمیئر لیگ سے ملک واپسی پر ایئرپورٹ سے گرفتار کیا۔

بعدازاں 12 جنوری 2023کو لیمی چین کی طرف سے دائر نظرثانی کی درخواست پر ہائی کورٹ نے کرکٹر کو 20 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے پر رہا کرنے کا حکم دیا تھا جس کے بعد سے وہ فی الحال ضمانت پر ہی رہا ہیں۔

ریپ الزامات کے باوجود فروری 2023 میں سندیپ لامیچانے کو انٹرنیشنل سیریز کے لیے منتخب کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ سندیپ لیمی چین پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل ) ، بگ بیش لیگ (بی بی ایل ) اور انڈین پریمیئر لیگ (آئی پی ایل ) بھی کھیل چکے ہیں۔

انہوں نے پی ایس ایل میں لاہور قلندرز کی نمائندگی کی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.